بچے قوم کی امانت ہوتے ہیں ان کی اچھی نشونما اوربہترین تعلیم ہروالدین کا اولین فرض ہوتا ہے یہ مستقبل کے معمار ہوتے ہیں قو میں ان سے بنتی ہیں آج کے مغرب زدہ دور نے منصوبہ بندی کا پراپگنڈہ کر کے ہماری بڑھتی ہوئی قوم کو تو کم کرنے میں کوئی رقیقہ فرد گزاشت نہیں کیا مگر ان کے اچھے مستقبل اور اعلی اور عام تعلیم و تربیت کے لئے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی پیدائش سے قبل ان کی آ مدکو روکنے کیلئے طرح طرح کی مضر صحت ادویات کھائی جاتی ہیں غیر فطری طریقے اپنائے جاتے ہیں اور ان تمام ادویات و طریق کے ضمنی برے اثرات ایک ماں کے جسم سے اتفاقیہ آنے والے بچے میں منتقل ہو جاتے ہیں اور وہ نو نہال جسے اس رنگ برنگے گلشن میں مہک کر اپنی خوشبو بکھیرنا تھی تمام عمر مرجھایا مرجھایا سا رہتا ہے اور شیر خواری میں تو وہ نونہال اپنی تکلیف بیان کرنے سے قاصر ہوتا ہے مستقبل کے اس سپاہی کی صحت و تند رستی کے لئے عرصہ دراز کی تحقیق کے بعد اور پھر تجربات کے مراحل سے گزر کر چند بے ضرر اور سریع الاثر ادویات کو متعارف کرایا جا رہا ہے جو ان نو نہالوں کی مکمل حفاظت اور نشونما کی ضامن ہیں اور ایک مضبوط اور صحت مند قوم ونسل کی گا رنٹی ہیں پیدائش سے قبل سے لے کر جوانی تک کی منازل عبور کرنے کیلئے ایک مفید پل ثابت ہونے والی ادویات پر انحصار ایک صحت مند معاشرے کی ضمانت ہے

Diarrhea پیچش

Chest Infection کھانسی، نزلہ ، زکام

Bottom Hieght قد کی کمی

کیلشیم کی کمی

خالی

خالی

خالی

خالی